کراچی ائیر پورٹ پر طیارے کا انجن اور پرزے غائب ہونے کا انکشاف

ہینگر سیل ہونے کے باوجود طیاروں سے کروڑوں روپے کے انجن اور پرزے غائب ہوئے جبکہ ہینگر میں کھڑے دو طیاروں کی پنکھڑیاں بھی غائب ہیں: ذرائع

 ہینگر سیل ہونے کے باوجود طیاروں سے کروڑوں روپے کے انجن اور پرزے غائب ہوئے جبکہ ہینگر میں کھڑے دو طیاروں کی پنکھڑیاں بھی غائب ہیں: ذرائع

کراچی ایئرپورٹ پر طیارے کا انجن اور پرزے غائب ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔

ذرائع کے مطابق نجی فلائنگ اسکول کے ہینگر میں کھڑے طیاروں کے پرزے اور انجن غائب ہوئے، سول ایوی ایشن نے نجی فلائنگ اسکول کے ہینگر کو سیل کر رکھا ہے۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ سی اے اے نے نجی کمپنی کے ایوی ایشن کو نادہندہ قرار دیا ہوا ہے، نادہندہ قرار دینے کے بعد سی اے اے نے طیارے تحویل میں لے کر ہنگر سیل کیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ہینگر سیل ہونے کے باوجود طیاروں سے کروڑوں روپے کے انجن اور پرزے غائب ہوئے جبکہ ہینگر میں کھڑے دو طیاروں کی پنکھڑیاں بھی غائب ہیں۔

ذرائع کے مطابق ہائی الرٹ سکیورٹی زون میں اس واقعے کی سول ایوی ایشن حکام نے ایف آئی آر تک درج نہیں کرائی۔