موسمیاتی تبدیلیوں کا شاخسانہ، پاکستان میں بےضرر مچھر بھی ملیریا پھیلانے لگا

فوٹو جیو نیوز

فوٹو جیو نیوز

موسمیاتی تبدیلیوں کے باعث پاکستان میں بےضرر مچھر بھی ملیریا پھیلانے لگا ہے۔

ڈائریکٹریٹ آف ملیریا کنٹرول کا دعویٰ ہے کہ موسمیاتی تبدیلیوں کے باعث پاکستان میں ملیریا پھیلانے والا روایتی مچھر غائب ہو گیا ہے، پاکستان کے سیلاب زدہ علاقوں میں "اینافلیس پلچیری مس” مچھر ملیریا پھیلا رہا ہے جو پہلے یہ کام نہیں کرتا تھا۔

وفاقی ڈائریکٹر ملیریا کنٹرول ڈاکٹر محمد مختار کا اس حوالے سے کہنا ہے غالب امکان ہے کہ اس سال شدید گرمی، سیلاب کے باعث ہمارا ملیریا پھیلانے والا روایتی مچھر ختم ہو گیا، سیلاب زدہ علاقوں میں ملیریا 5 سے 10 گنا زیادہ تیزی سے پھیل رہا ہے۔

فوٹو جیو نیوز
فوٹو جیو نیوز

ڈاکٹر محمد مختار کا کہنا ہے کہ نئے مچھر کے نمونے ڈی این اے اور بلڈ ٹیسٹ کے لیے سینٹر فار ڈیزیز کنٹرول امریکا بھیجے ہیں، ملیریا کے حوالے سے نئی ڈویلپمنٹ پر امریکی اور عالمی ادارہ صحت کے حکام بھی ریسرچ کر رہے ہیں۔

وفاقی ڈائریکٹر ملیریا کنٹرول کا کہنا ہے کہ نیا مچھر سامنے آنے کے باعث ملیریا کنٹرول کی نئی حکمت عملی بنانی ہو گی۔

وفاقی وزارت صحت کے حکام کے مطابق اس سال اب تک ملیریا کے 50 لاکھ مشتبہ کیس سامنے آچکے ہیں۔