فراڈ کا مقدمہ، ٹرمپ اور انکے بچوں پر نیویارک میں کاروبار کرنے پر پابندی عائد

سابق امریکی صدر اور ان کے بچوں کے خلاف 25 کروڑ ڈالرکا مقدمہ دائرکیا گیا ہے: اٹارنی جنرل— فوٹو: فائل

امریکی ریاست نیویارک نے ٹیکس بچانے کیلئے فراڈ کے مقدمے میں تحقیقات کے بعد سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے بچوں پر نیویارک میں کاروبار کرنے پر پابندی عائد کردی۔

ریاست نیویارک نے سابق صدر ٹرمپ کے کاروبار میں مالی بے ضابطگیوں کے کیس میں تحقیقات کے بعد مقدمہ دائرکردیا۔

نیویارک کی اٹارنی جنرل لٹیٹیا جیمز کے مطابق سابق امریکی صدر اور ان کے بچوں کے خلاف 25 کروڑ ڈالرکا مقدمہ دائرکیا گیا ہے۔

اٹارنی جنرل کا کہنا تھاکہ تحقیقات سے ثابت ہوا کہ سابق صدر اوران کے بچوں نے ٹیکس بچانے کیلئے فراڈ کیا۔

ان کا کہنا تھاکہ ٹرمپ کے خلاف تحقیقات تین سال تک جاری رہیں، ٹرمپ اور ان کے ادارے نے پراپرٹی کا غلط تخمینہ دیا، ٹیکس کاغذوں پر جھوٹ بولا اور اُن دستاویزات کو ٹیکس وصولی ادارے کے پاس بھیجا جا رہا ہے۔

نیویارک اٹارنی جزل کے مطابق ٹرمپ اور ان کے بچوں پر نیویارک میں کاروبار کرنے پر بھی 5 سال کی پابندی لگائی جارہی ہے اور وہ کاروبار کیلئے قرض بھی نہیں لے سکیں گے۔