امارات اسلامی لڑکیوں کی تعلیم کے خلاف نہیں، سہیل شاہین

امریکی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے سہیل شاہین کا کہنا تھا کہ افغانستان میں لاکھوں بچیاں پرائمری اسکولوں میں زیر تعلیم ہیں—فوٹو:فائل
امریکی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے سہیل شاہین کا کہنا تھا کہ افغانستان میں لاکھوں بچیاں پرائمری اسکولوں میں زیر تعلیم ہیں—فوٹو:فائل

طالبان قطر دفتر کے سربراہ سہیل شاہین کا کہنا ہے کہ امارات اسلامی لڑکیوں کی تعلیم کے خلاف نہیں ہے۔

امریکی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے سہیل شاہین کا کہنا تھا کہ افغانستان میں لاکھوں بچیاں پرائمری اسکولوں میں زیر تعلیم ہیں، تعلیم، اعلیٰ تعلیم، عوامی صحت اور داخلہ کی وزارتوں میں خواتین کام کر رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی تعلیمات کی روشنی میں دیگر مسائل حل کرنے کے لیے بھی کام کر رہے ہیں، افغانستان ایک اسلامی ملک ہے، خواتین کے حقوق کے معاملے میں افغانستان کا یورپی ممالک سے موازنہ نہیں کیا جا سکتا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ امارت اسلامی دوحا معاہدے کی پاسداری پر عمل پیرا ہے، کسی کو بھی افغان سرزمین امریکا یا کسی اور ملک کے خلاف استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، یہ ہماری پالیسی ہے جس میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔