جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی میں چہرے پر مصنوعی اعضاء لگانےکا کامیاب آپریشن

فوٹو: فائل

فوٹو: فائل

جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی (جے ایس ایم یو) کے سندھ انسٹی ٹیوٹ آف اورل ہیلتھ سائنسز کے شعبہ پروستھوڈونٹکس نے چہرے پر مصنوعی اعضاء لگانے کا پہلا  آپریشن کامیابی کے ساتھ مکمل کرلیا۔

جے ایس ایم یو کے اعلامیے کے مطابق پروستھو ڈونٹکس ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ پروفیسر محمود حسین کی سربراہی میں 8 رکنی ٹیم نے ضلع عمرکوٹ سے تعلق رکھنے والی مریضہ کی آنکھ، چہرے، ناک اور منہ کے اندرونی حصوں کو مصنوعی اعضاء کے ساتھ کامیابی سے تبدیل کیا۔

جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر امجد سراج میمن نےسندھ انسٹی ٹیوٹ آف اورل ہیلتھ سائنسز کے شعبہ پروستھوڈونٹکس کی ٹیم کو اہم سنگ میل عبور کرنے پر مبارک باد دی۔

ان کا کہنا ہے کہ کسی حادثے کی وجہ سے چہرہ بگڑ جانے کے حامل افراد خود کو معاشرے میں تنہا محسوس کرنے لگتے ہیں، ایسے میں جےایس ایم یو میں مصنوعی اعضاء لگانے کا عمل ان افراد کو معاشرے سے جوڑنے میں مؤثر کردار ادا کرے گا۔