قلیل مدتی وقفے ملازمین کی کارکردگی بہتر کرسکتے ہیں، تحقیق

تحقیق کے مطابق قلیل مدتی وقفے طویل مدتی وقفوں کی طرح کارکردگی پر اثر انداز نہیں ہوتے

ایک نئی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ کام کے دوران چھوٹے چھوٹے وقفوں کا رجحان ملازمین کی کارکردگی ممکنہ طور پر بہتر کرسکتا ہے۔

پچھلے کچھ ہفتوں سے ٹِک ٹاک ’کوائٹ کوئیٹنگ‘(Quite Quitting) نام کے ایک ٹرینڈ کی زد میں ہے جس میں نوجوان ملازمین ذہنی تھکاوٹ سے بچنے کے لیے کم سے کم کام کر رہے ہیں۔ ماہرین کی جانب سے اس رجحان پر تنقید کی جارہی۔ بعض ماہرین نے اس کو وقتی حل قرار دیا ہے۔

البتہ رومانیہ کی ویسٹ یونیورسٹی آف ٹائمیوارا کے محققین کو ایک تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ ملازمت کے اوقات میں کام کے دوران چھوٹے چھوٹے وقفے آپ کی توانائی کو بڑھانے اورتھکن کو کم کرنے کا سبب ہوسکتے ہیں۔

جرنل PLOS ONE میں شائع ہونے والی اس تحقیق میں محققین نے لکھا کہ چھوٹے وقفے بڑی مقدار میں توانائی کو بچانے اور تھکاوٹ کو کم کرنے میں مؤثر ہوتے ہیں۔جبکہ یہ قلیل مدتی وقفے طویل مدتی وقفوں کی طرح کارکردگی پر اثر انداز نہیں ہوتے۔

تحقیق کے نتائج کی بناء پر محققین نے باسز کو مشورہ دیا ہے کہ انہیں اپنے ملازمین کو قلیل مدتی اور طویل مدتی وقفوں کا ایک مرکب پیش کرنا چاہیئے۔ اس تحقیق میں محققین نے دورانِ کام قلیل مدتی وقفوں کے اثرات پر کیے گئے اور 22 مطالعات کا جائزہ لیا گیا۔

واضح رہے قلیل مدتی وقت سے مراد 10 یا اس سے کم دورانیے کا وقفہ ہے۔